مختصر تعارف

کیمیائی بحریات کا بنیادی مقصد یہ ہے کہ سمندر کا اس نظر سے جائزہ لینا کہ وہ ایک کیمیائی نظام ہے۔ مزید براں کہ سمندری ماحولیات کو بھی سمجھنا کہ اس سمندری ماحول میں جو تبدیلیاں قدرتی عوامل سے انسانی سرگرمیوں سے وقوع پذیر ہو رہی ہے ان سب کا احاطہ کرنا ۔ قومی ادارہ بحریات نے بحری ماحولیات کے مسائل اور ان کا حل تلاش کرنے کے لیئے جدید ترین بحریاتی آلات اور ٹیکنالوجی حاصل کی ہے ۔ انکی مدد سے بیش بہا کامیابیاں حاصل کی ہیں ۔


اس شعبہ سے وابستہ محقیقین کی توجہ بنیادی طور پر ان موظوعات پر ہے۔

دریائے سندھ اور بحریہ عرب کی باہمی ملاپ کے ماحولیات اور وہاں کی مخصوص کمٹری کا مطالعہ کرنا اور وہاں کے مخصوص ماحولیات کا وہاں کے جاندار اور درختوں جڑی بوٹیوں پر ہونے والے اثرات کا مشاہدہ کرنا ۔ سمندر میں ہونے والی آلودگی کا مشاہدہ اور مطالعہ کا مسلسل جائزہ لینا۔ سمندر میں حل شدہ گیسوں اور نیوٹرینٹس کی وسعت اور پھیلاؤ کا جائزہ لینا۔ سائنش دانوں کی توجہ سمندری آلودگی کی مسلسل شاہدہ اور اس کے بچاؤ کی کوشش کرنا ۔ ماحولیات پر آلودگی کے مظر اثرات کا مطالعہ اور ماحولیاتی حساسیت کاجائزہ لینا۔ آلودگی کے معیار کے حوالے سے ساحلی علاقوں کی درجہ بندی کرنا۔آلودگی کے حوالے سے ضروری اعداد و شمار جمع کرنا تاکہ سمندر میں خارج ہونے والی آلودگی کا الگ معیار بنایا جاسکے اور جس کی مدد سے آلودگی سے بچاؤ کی ضروری تدابیر اختیار کی جا سکیں ۔